ٹھیکہ دار صاحب

 

ٹھیکہ دار صاحب

 

ایک ٹھیکہ دار صاحب کسی محکمہ میں اپنا کام نکلوانے کے لیے ایک آفسر کو کار کی پیشکش کر رہے تھے۔۔۔ آفیسر نے متانت سے کہا :” جناب ! یہ رشوت ہوگی اور میرا ضمیر اس کی اجازت نہیں دے سکتا۔"

"لیکن سُنیے تو ! میں یہ کار آپ کو مفت نہیں دے ریا ، آپ اس کار کے عوض دس روپے دے دیں ۔۔۔ اب تو یہ رشوت نہیں ہوگی ۔۔۔یہ تو خرید و فروخت کا سیدھا سادھا معاملہ ہے ۔"

ٹھیکیدار صاحب نے لجاجت سے کہا ۔۔۔۔

آفیسر نے چند لمحے غور کیا اور پھر بیس روپے جیب سے نکالتے ہوئے گویا ہوا۔۔۔۔۔۔

" ایسی صورتِحال میں تو میں دو کاری خریدون گا ۔۔۔۔۔۔"

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: