اشعار

میں کچھ کہوں تو عذاب آئے

میں کچھ نہ بولوں تو لوگ روٹھیں

یاد صدیقیؔ

—————————————

عجمی ہے نہ عرب جیسا ہے

اپنے ہی نام و نسب جیسا ہے

تحفہء آم بھی تیرا اے دوست

تحفہء اردو ادب جیسا ہے

یاد صدیقیؔ

 

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: