خوابوں کا نگر

 

خوابوں کا نگر دیکھو

جلتے ہیں شجر دیکھو

عیب اپنے چھپاتے ہیں

لوگوں کے ہنر دیکھو

ٹوٹے گا کوئی تارا

آئے گی خبر دیکھو

لے جاتی ہے پھولوں کو

تقدیر کدھر دیکھو

کٹنے میں نہیں آتا

تاروں کا سفر دیکھو

واپس نہیں آئے گی

یہ راہ گزر دیکھو

 
 
شمیم روش

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: